ایران اسرائیل پر حملہ کر سکتا ہے، اسرائیلی وزیر

شیئر کریں

اسرائیل کے ایک وزیر نے کہا ہے کہ ایران اور امریکہ کے درمیان کشیدگی میں اضافے کی صورت میں تہران حکومت اسرائیل پر حملے کا فیصلہ کر سکتی ہے یا حزب اللہ کو اسرائیل کے خلاف سرگرم کر سکتی ہے۔

اسرائیلی کابینہ میں شامل وزیر توانائی یووال سٹائنٹز نے کہا ہے کہ خلیج کے خطے میں معاملات گرم ہو رہے ہیں۔ اسٹائنٹز وزیراعظم بینجمن نیتن یاہو کی سکیورٹی کابینہ کے رکن بھی ہیں۔

اسرائیل کے وائی نیٹ ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا سٹائنٹز نے اگر ایران اور امریکہ کے درمیان ٹکراؤ ہوتا ہے یا ایران کا ہمسایوں کے ساتھ ٹکراؤ ہوتا ہے تو میں اس بات کو خارج از امکان قرار نہیں دے رہا کہ وہ حزب اللہ اور غزہ سے اسلامک جہاد کو سرگرم کر دیں گے۔ یا وہ ایران سے اسرائیلی ریاست پر میزائل داغنے کی کوشش بھی کر سکتے ہیں۔

خیال رہے کہ حزب اللہ اور اسلامک جہاد ایرانی حمایت یافتہ گوریلا گروپ ہیں جو اسرائیلی سرحدوں کے قریب سرگرم ہیں۔ حزب اللہ لبنان اور شام میں سرگرم ہے جبکہ اسلامک جہاد فسلطین میں۔



شیئر کریں