قندیل بلوچ نے شادی کا اعتراف کرلیا

قندیل بلوچ نے شادی کا اعتراف کرلیا

نیوز ڈیسک۔۔۔

سکینڈل کوئین قندیل بلوچ کے بارے میں انکشاف ہوا ہے کہ انہوں نے کوٹ ادو سے تعلق رکھنے والے عاشق حسین نامی شخص سے شادی کی تھی اور اس کا ایک بچہ بھی ہے ۔

قندیل بلوچ نے شادی کا اعتراف کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب وہ 18 سال کی تھی تو ماں باپ نے 2008 میں عاشق حسین نامی شخص سے زبردستی شادی کرا دی تھی جس سے ایک بچہ بھی ہے لیکن شادی کے بعد میں نے کہا کہ مجھے پڑھنا ہے اور اس پسماندہ علاقے میں نہیں رہنا جس کے بعد تعلیم جاری رکھنے کی غرض سے عاشق سے خلع لی۔

انگریزی رو زنامے ایکسپریس ٹرائبیون سے بات کرتے ہوئے قندیل بلوچ کا کہنا تھا کہ عاشق حسین اس پر تشدد کرتا تھا جس کے تشدد کی وجہ سے اس نے دارالامان میں پناہ لی۔ان کا کہنا تھا کہ کیا ایک عورت کا حق نہیں کہ وہ اپنی زندگی جئے اور پڑھائی جاری رکھے،عاشق حسین مجھے بھائیوں سے بھی نہیں ملنے دیتا تھا اور ہمسائیوں کے ہاں بھی جانے پر پابندی تھی۔ ان کا کہنا تھا کہ مجھے سمجھ نہیں آرہی کہ میرے خلاف پاکستان میں کیوں پروپیگنڈا کیا جارہا ہے اور اب میں مشہور ہورہی ہوں تو یہ شخص دعوے کررہا ہے۔

قندیل بلوچ کے شوہر عاشق حسین نے ایکسپریس نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ قندیل بلوچ جھوٹ بول رہی ہے، ہماری پسند کی شادی ہوئی تھی جب کہ قندیل بلوچ کے خون سے لکھے گئے رومانوی خطوط بھی موجود ہیں۔ عاشق حسین نے کہا کہ قندیل بلوچ نے بنگلہ، گاڑی اور دیگر مطالبات شروع کردیئے تھے اور ملازمت کے لئے ضد کرنے لگی تو دونوں کے درمیان معاملات خراب ہوگئے تھے۔
حال ہی میں ماڈل قندیل بلوچ کے اصلی شناختی کارڈ کا عکس میڈیا میں عام ہوا تھا جس میں ان کا نام قندیل بلوچ نہیں بلکہ فوزیہ عظیم ہے ۔ اس کی جائے پیدائش ڈیرہ غازی خان ہے اور وہ یکم مارچ 1990 کو پیدا ہوئیں۔