بھارت نے سارک کانفرنس میں شرکت سے انکار کر دیا

بھارت نے سارک کانفرنس میں شرکت سے انکار کر دیا

نمائندہ ہم شہری۔۔۔۔

بھارت نے اسلام آباد میں ہونے والے 19ویں جنوبی ایشیائی علاقائی تعاون کی تنظیم سارک سربراہی اجلاس میں شرکت سے انکار کردیا ہے۔پاکستان نے بھارت کے ایسے اقدام کو بدقسمتی قرار دیا ہے۔واضح رہے 19 ویں سارک کانفرنس اس سال نومبر میں اسلام آباد میں منعقد ہو گی۔

بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان ویکاس سوراپ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کہا ہے کہ علاقائی تعاون اور دہشت گردی ایک ساتھ جاری نہیں رہ سکتے اور بھارت اسلام آباد میں ہونے والی سارک سربراہی کانفرنس میں شرکت نہیں کرے گا۔

انھوں نے اپنے ٹوئٹ میں وزارت کا ایک بیان بھی شیئر کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بھارت نے سارک کے موجودہ سربراہ نیپال کو آگاہ کر دیا ہے کہ خطے میں جاری سرحد پار دہشت گردی اور ایک ملک کی جانب سے رکن ممالک کے اندرونی معاملات میں مداخلت کا ماحول اسلام آباد میں ہونے والی 19 ویں سارک سربراہی کانفرنس کے لیے سازگار نہیں ہے ۔

بھارت کی جانب سے اسلام آباد میں ہونے والی 19 ویں سارک کانفرنس میں شرکت سے انکار کے اعلان کے فوری بعد پاکستان کے دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس زکریا نے ٹوئٹر پرکہا کہ بھارت کا اعلان غیر متوقع ہے اور اس حوالے سے ہم سے باضابطہ رابطہ نہیں کیا گیا۔

دفتر خارجہ کے بیان میں کہا گیا کہ بھارت کی جانب سے کانفرنس میں شرکت نہ کرنے کے حوالے سے ان کی وزارت خارجہ کے ترجمان کا پیغام پاکستان کے نوٹس میں آیا ہے ۔ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ پاکستان علاقائی تعاون اور امن کے ساتھ وابستہ رہنے کے لیے پر عزم ہے ۔

کانفرنس میں شرکت نہ کرنے کے لیے بیان کی گئی وجہ کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ دنیا جانتی ہے کہ بھارت پاکستان میں دہشت گردی پھیلا رہا ہے۔