پاکستان کے بد قسمت بلے باز

پاکستان کے بد قسمت بلے باز

سپورٹس ڈیسک…

پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان جاری تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز میں ویسے تو قومی ٹیم کی پرفارمنس خاصی اچھی جارہی ہے۔ مگر اس سیریز کے ابتدائی دو میچوں میں ٹیم کے کپتان مصباح الحق کافی بدقسمت ثابت ہوئے ہیں

مصباح الحق بارباڈوس میں کھیلے جا رہے دوسرے ٹیسٹ میچ کی پہلی اننگ میں 99 رنز بنا کر آوٹ ہوگئے اور وہ اپنے کیریئر کی گیارہویں سینچری بنانے سے محروم رہے۔نا صرف بارباڈوس بلکہ دونوں ٹیموں کے مابین کھیلے گئے پہلے میچ یعنی جمیکا ٹیسٹ میں بھی مصباح  99 رنز ہی بنا سکے تھے۔

اس میچ میں ویسے تو مصباح ناٹ آوۤٹ رہے تھے مگر پوری ٹیم کے پویلین لوٹنے کے سبب وہ 99 کے ہندسے تک محدود رہے تھے۔ یوں ویسٹ اندیز کے خلاف ٹیسٹ سیریز میں مصباح الحق نے لگاتار 2اننگز میں198 رنز بنائے ہیں۔

اس سے قبل 2011میں نیوزی لینڈ کے خلاف ویلنگٹن ٹیسٹ میچ کی پہلی اننگ میں قومی ٹیسٹ ٹیم کے کپتان 99 کے مجموعے پر کرس مارٹن کو وکٹ دے بیٹھے تھے۔اسطرح لیجنڈ کرکٹرتین مرتبہ ٹیسٹ سینچری تو نہ بنا سکے ۔لیکن ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ میں سب سے زیادہ بار 99 رنز تک محدود رہنے کا اعزاز اپنے نام کر لیا۔

اگر ٹیسٹ کرکٹ کی تاریخ پر ایک نظر ڈالیں تومصباح سے قبل انگلینڈ کے مائیکل ایتھرٹن،جیف بائیکاٹ،مائیک اسمتھ،آسٹریلیا کےسائمن کیٹچ،گریک بلیوٹ،بھارت کے ساروگنگولی،نیوزیلینڈ کے جان رائٹ،ویسٹ انڈیز کے رچی رچرڈ سن،اور پاکستان کے سابق کپتان سلیم ملک کیریئر میں2مرتبہ 99 پر آوٹ ہوئے ہیں۔