اسحاق ڈار کو مشترکہ مفادات کونسل سے ہٹادیا گیا

اسحاق ڈار کو مشترکہ مفادات کونسل سے ہٹادیا گیا

نمائندہ ہم شہری…

حکومت نے وزیر خزانہ اسحاق ڈار کی مشترکہ مفادات کونسل کی رکنیت خارج کردی ہے وزیر خزانہ کئی روز سے علاج کے سلسلے میں لندن میں ہیں۔

وزیر خزانہ کی ملک میں عدم موجودگی کے باعث ان کی مشترکہ مفادات کونسل کی رکنیت ختم کردی گئی اور ان کی جگہ وزیر داخلہ احسن اقبال کو مشترکہ مفادات کونسل کا رکن مقرر کیا گیا ہے۔ احسن اقبال کے پاس وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی کا اضافہ چارج بھی ہے۔

وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے اسحاق ڈار کو ہٹانے کی سفارش کی تھی جس کی صدر مملکت نے منظوری دیدی ہے اور اس کا اطلاق بھی فوری طور پر ہوگا۔

وزیر داخلہ احسن اقبال اب اسحاق ڈار کی جگہ مشترکہ مفادات کونسل میں فیڈریشن کے رکن ہوں گے جس کا نوٹی فکیشن جاری کردیا گیا ہے۔ احسن اقبال کے بعد مشترکہ مفادات کونسل میں اب فیڈریشن کے ارکان میں وزیر بین الصوبائی رابطہ اور وزیر صنعت و پیداوار شامل ہیں۔

حکومت نے پیپلزپارٹی کے مطالبے پر آج مشترکہ مفادات کونسل کا اجلاس طلب کررکھا ہے جو آج شام 4 بجے وزیراعظم کی صدارت میں ہوگا۔ اس اجلاس میں مردم شماری کے نتائج پیش کیے جائیں گے جب کہ نئی حلقہ بندیوں کے حوالے سے بھی غور ہوگا۔

واضح رہے کہ پیپلزپارٹی نے پارلیمانی رہنماؤں کے اجلاس میں نئی حلقہ بندیوں کے لیے مردم شماری کے نتائج مشترکہ مفادات کونسل میں لانے کا مطالبہ کیا ہے۔