ممتاز بھٹو نے اپنی جماعت کو پی ٹی آئی میں ضم کر دیا

ممتاز بھٹو نے اپنی جماعت کو پی ٹی آئی میں ضم کر دیا

نیوز ڈیسک…

ممتاز بھٹو کی سندھ نیشنل فرنٹ نے پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) میں ضم ہونےکا اعلان کر دیا ہے۔

کئی ماہ کی بات چیت کے بعد سندھ نیشنل فرنٹ کے وائس چیئرمین امیر بخش بھٹو اور پی ٹی آئی کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی نے دارالحکومت اسلام آباد میں معاہدے پر دستخط کردیئے۔

اس موقع پر شاہ محمود قریشی نے نومبر کے دوران سندھ میں ایک اور بریک تھرو کا اشارہ  دیا جبکہ پی ٹی آئی رہنما نے متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) اور پاک سرزمین پارٹی (پی ایس پی) میں اتحاد نہ ہونے کی پیش گوئی کرتے ہوئے کراچی کے شہریوں کو متبادل سیاسی قیادت کی پیش کش بھی کر دی۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ممتاز بھٹو کے ساتھ کئی ماہ سے بات چیت جاری تھی اور عمران خان کے دورہ سندھ میں نوجوانوں نے ان کو بھرپور پذیرائی دی۔

  ممتاز بھٹو پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ (ن) کا حصہ بھی رہ چکے ہیں۔ گورنر سندھ عشرت العباد  کے عہدہ چھوڑنے پر یہ قیاس آرائیاں کی جارہیں تھی کہ ممتاز بھٹو گورنر کی نشست پر براجمان ہونا چاہتے ہیں۔ ممتاز بھٹو کو گورنر سندھ مقرر نہ کیے جانے پر ان کے اور مسلم لیگ (ن) کی قیادت کے درمیان اختلافات پیدا ہوگئےجس کے بعد ممتاز بھٹو نے شریف خاندان سے اپنی راہیں جدا کرلیں۔