سندھ ہائی کورٹ نے این ٹی ایس ٹیسٹ دوبارہ لینے کا نوٹیفیکشن منسوخ کر دیا

سندھ ہائی کورٹ نے این ٹی ایس ٹیسٹ دوبارہ لینے کا نوٹیفیکشن منسوخ کر دیا

نمائندہ ہم شہری…

سندھ ہائی کورٹ نے میڈیکل کالجوں کے داخلے کے لیے لیے جانے والے نیشنل ٹیسنگ سروس (این ٹی ایس) کے امتحانات میں سابقہ نتائج برقرار رکھنے کا حکم دیتے ہوئے سندھ حکومت کی جانب سے دوبارہ امتحانات لینے کا حکم کالعدم قرار دے دیا ہے۔

رواں برس اکتوبر میں میڈیکل یونیورسٹیوں میں داخلے کے این ٹی ایس ٹیسٹ سے قبل پرچہ آؤٹ ہونے کی رپورٹس سامنے آنے پرسندھ حکومت نے تحقیقات کا آغاز کرتے ہوئے این ٹی ایس ٹیسٹ کو منسوخ کردیا تھا اور وزیراعلیٰ سندھ نے دوبارہ امتحان لینے سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کردیا تھا، جس کے بعد 150 سے زائد طلبہ اور والدین نے سندھ ہائی کورٹ سے رجوع کیا اور موقف اختیار کیا کہ وہ ٹیسٹ میں پاس ہو چکے ہیں، دوبارہ ٹیسٹ کیوں دیں۔

فریقین کے دلائل مکمل ہونے کے بعد آج سندھ ہائی کورٹ نےاین ٹی ایس ٹیسٹ کے نتائج کو  برقرار رکھنے کا حکم سنایا ہے۔

رواں برس سندھ میں پہلی بار بیک وقت 5 شہروں کراچی، حیدرآباد، سکھر، نوابشاہ اور لاڑکانہ میں داخلہ ٹیسٹ لیے گئے تھے جس میں صوبے بھر سے 21 ہزار سے زائد طلبا و طالبات نے شرکت کی تھی۔