Category Archives: بستی – انتظار حسین

Feed Subscription

بستی – قسط نمبر 21

بستی – قسط نمبر 21

انتظار حسین۔۔۔۔۔ وہ تلخ سی ہنسی ہنسا، بولا کچھ نہیں۔ ’’کاکے! تجھے مجھ پہ اعتبار نہیں ہے‘‘ افضال بے دماغ ہو گیا۔ ’’تجھ پہ تو اعتبار ہے، اپنے پہ اعتبار نہیں ہے‘‘۔ ’’کیوں اعتبار نہیں ہے؟ یار ان مکروہ لوگوں کے درمیان ہم ہی تو وہ دو خوبصورت آدمی ہیں‘‘۔ رکا، پھر بولا ’’تجھے پتہ ہے مجھے کچھ مربع الاٹ ...

مزید پڑھیے

بستی – قسط نمبر 20

بستی – قسط نمبر 20

انتظار حسین۔۔۔۔۔ عبدل نے جلد ہی چائے لا کر چِن دی۔ عبدل آج جلدی جلدی سرو کر رہا تھا۔ چائے پینے والوں سے باتیں جو نہیں کر رہا تھا۔ سامنے رکھی چائے ٹھنڈی ہو رہی تھی اور سفید سر والا آدمی سامنے دیوار کو تکے جا رہا تھا۔ اچانک سر جھکا کے منہ پہ رومال لیا اور سسکیاں لے کے ...

مزید پڑھیے

بستی – قسط نمبر 19

بستی – قسط نمبر 19

انتظار حسین۔۔۔۔۔ میں نے قریب جا کر رازدارانہ پوچھا: ’’عزیز کیا نیت ہے؟‘‘ پھکنی والے نے کڑک کر کہا: ’’لڑیں گے؟‘‘ میں نے پھکنی والے، پھر چارپائی کی پٹی والے کو حیرت سے دیکھا اور آگے بڑھ لیا۔ پھر خود ہی حیرت رفع ہوگئی۔ ٹھیک ہے، لڑنے والے پھکنی چمٹے او ر چار پائیوں کی پٹیوں سے بھی لڑ لیتے ...

مزید پڑھیے

بستی – قسط نمبر 17

بستی – قسط نمبر 17

انتظار حسین۔۔۔۔۔ 10دسمبر: کالج میں کلاسیں ولاسیں تو ہوتیں نہیں، بس اسے چھوکر شیراز میں آن بیٹھتا ہوں۔ پھر عرفان آجاتا ہے۔ کبھی کبھی افضال بھی آن دھمکتا ہے۔ سلامت اورا جمل دکھائی نہیں دیتے مگر سنا ہے کہ وہ انقلابی سے حب وطن بن گئے ہیں اور سپاہیوں کے لیے تحفے جمع کرتے پھرتے ہیں۔ ہم سے تو وہی ...

مزید پڑھیے

بستی – قسط نمبر 16

بستی – قسط نمبر 16

انتظار حسین۔۔۔۔۔ ابا جان نے جنگ کی لمبی راتوں کو گزرانے کا اچھا طریقہ سوچا ہے۔ مصلیٰ بچھا کر بیٹھ جاتے ہیں اور رات گئے تک بیٹھے رہتے ہیں۔ ان کی دیکھا دیکھی امی جان نے بھی اپنی عشا کی نماز کو طول دینا شروع کردیا ہے۔ میری سمجھ میں ان راتوں کو گزرانے کا طور نہیں آرہا تھا۔ لالٹین ...

مزید پڑھیے

بستی – قسط نمبر 15

بستی – قسط نمبر 15

انتظار حسین۔۔۔۔۔ موٹریں، ٹیکسیاں، رکشائیں، تانگے سب سواریاں عجلت میں تھیں کہ ایک دوسرے پر چڑھ جا رہی تھیں۔ اسے سڑک عبور کرنا دشوار نظر آرہا تھا۔ سواریوں کو دیکھا۔ دفعتاً ایک کار کہ اس کی پشت پر CRUSH INDIA لکھا ہوا تھا۔ سواریوں سے بھری، سامان سے لدی فراٹے کے ساتھ اس کے برابر سے گزری چلی گئی۔ کار ...

مزید پڑھیے

بستی – قسط نمبر 14

بستی – قسط نمبر 14

انتظار حسین۔۔۔۔۔ ’’امی ہم وہاں جائیں تو ٹھہریں گے کہاں؟‘‘ ’’لڑکے تیرا دماغ چل گیا ہے، وہاں اب ہم کیوں جائیں گے۔ وہاں ہمارا کون بیٹھا ہے‘‘۔ ’’خود روپ نگر تو ہے‘‘۔ اس نے سوچتے ہوئے آہستہ سے کہا اور امی جیسے لاجواب ہو گئی ہوں، بالکل چپ ہو گئیں۔ ’’امی تو چپ ہو گئی تھیں، مگر پھر انہیں کچھ ...

مزید پڑھیے

بستی – قسط نمبر 13

بستی – قسط نمبر 13

انتظار حسین۔۔۔۔۔ اس کے بعد وہ بالکل چپ ہو گئی۔ میں بھی سٹپٹا کر چپ ہو گیا۔ پھر وہ چلی گئی۔ دوسرے دن وہ نہیں آئی۔ تیسرے دن بھی نہیں آئی مگر میرے لیے اب اس لڑکی میں نئے معنی پیدا ہو گئے تھے۔ اب میرے لیے وہ ریڈیو کی اناؤنسر لڑکی نہیں تھی، گمشدہ دوست کی نشانی تھی۔ میں ...

مزید پڑھیے

بستی – قسط نمبر 12

بستی – قسط نمبر 12

انتظار حسین۔۔۔۔۔ ’’یار عرفان!‘‘ عرفان نے اس کی طرف دیکھا، مگر وہ چپ تھا۔ ’’کیا بات ہے‘‘ ’’یار‘‘! رکا، پھر کچھ جھجکتے ہوئے ’’یار پاکستان ٹھیک بنا تھا؟‘‘ عرفان نے اسے تیز نظروں سے دیکھا تم پر بھی سلامت کا اثر ہوگیا ہے؟‘‘ ’’سلامت کا نہیں، یہ تمہارا اثر ہے۔‘‘ ’’کیسے؟‘‘ ’’شک کی جب ابتدا ہوجائے تو پھر اس کی ...

مزید پڑھیے

بستی – قسط نمبر 11

بستی – قسط نمبر 11

انتظار حسین۔۔۔۔۔ ’’یار سنا ہے پر مجھے یقین نہیں آیا‘‘۔ ’’فجر کو اُٹھ اور آسمان کو دیکھ، یقین آ جاوے گا۔ دم بالکل جھاڑو کی طرح ہے‘‘۔ ’’یار کہیں جھاڑو ہی نہ پھر جاوے‘‘۔ شیراز میں اس نے ابھی قدم رکھا ہی تھا اور عرفان سے، جو وہاں پہلے ہی سے بیٹھا ہوا تھا۔ علیک سلیک کی ہی تھی کہ ...

مزید پڑھیے
اوپر جائیں